نہار منہ کھانے اور نہ کھانے والی غذائیں

نہار منہ کھانے اور نہ کھانے والی غذائیں
کہتے ہیں کہ ناشتہ ہماری اچھی صحت کے لیے بہت ضروری ہے، تاہم کئی لوگ ناشتہ کرنے کے بجائے سیدھا دن میں کھانا کھانے کو اہمیت دیتے ہیں جس سے کئی افراد کا مکمل دن جسمانی طور پر سست روی سے گزرتا ہے۔
دنیا بھر کے ڈاکٹروں کا ماننا ہے کہ ناشتہ ہماری جسمانی صحت کے لیے بے حد ضروری ہے اور وہ افراد جو ناشتہ نہیں کرتے، وہ بڑھتی عمر کے ساتھ کئی اقسام کے مرض میں مبتلہ ہوسکتے ہیں۔
لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ ایسی بہت سی غذائیں ہیں جنہیں نہار منہ کھانا صحت کے لیے نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے؟
یہاں ایسی غذاوں کی فہرست ترتیب دی گئی ہے کہ صبح اٹھنے کے بعد نہار منہ کون سی غذائیں کھانی چاہیے اور کن سے پرہیز کرنا چاہیے:
نہار منہ نہ کھائیں
پیسٹریز یا کیک وغیرہ
نہار منہ پیسٹری جیسی غذاؤں سے پرہیز کرنا چاہیے جس کی وجہ یہ ہے کہ خمیر والی غذائیں نہار منہ پیٹ کے لیے ٹھیک نہیں اور ان سے معدے اور آنتوں میں تکلیف اور گیس کے مسائل پیش آسکتے ہیں۔
مٹھائی
صبح اٹھتے ہی خالی پیٹ میں پیٹھا کھانا پتے کے لیے نقصان دہ ہے، ایسا کرنے سے ذیابیطس کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے۔
دہی
اگر نہار منہ دہی کھایا جائے تو پیٹ میں ہائیڈروکلورک ایسڈ پیدا ہوسکتا ہے، جو آپ کے پیٹ میں موجود
لیکٹک ایسڈ بیکٹیریا کو ختم کردیتا ہے، جو کہ آپ کے جسم کے لیے فائدہ مند ہے، اس لیے خالی پیٹ دہی کھانا فائدہ مند نہیں۔
امرود
امرود میں خام ریشہ موجود ہوتا ہے، جس کہ نہار منہ کھائے جانے سے بلغم کی جھلی متاثر ہوتی ہے، اس لیے اسے خالی پیٹ کھانے کا انتخاب درست نہیں۔
ٹماٹر
ٹماٹر میں ٹینک ایسڈ کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے، جسے نہار منہ کھایا جائے تو معدے میں تیزابیت کا خطرہ بڑھ جاتا ہے، اور اس تیزابیت سے گیسٹرک السر بھی ہوسکتا ہے۔
کھیرا یا دیگر ہری سبزیاں
کچی سبزیوں میں امینوں ایسڈ زیادہ مقدار میں موجود ہوتا ہے، جو خالی معدے کے لیے بے حد نقصان دہ ہے، ان سبزیوں کو نہار منہ کھایا جائے تو سینے میں جلن اور پیٹ درد کے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
کیلا
خالی معدے پر کیلا کھانے سے جسم میں میگنیشیم کی مقدار بڑھ سکتی ہے، جو کہ خون میں شامل ہوکر دل کے لیے بے حد نقصان دہ ثابت ہوسکتا ہے۔
مصالحے
صبح خالی پیٹ میں مصالحے دار کھانا کھانے سے پیٹ کی جلن کے مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، اس کے علاوہ مصالحے دار کھانے ہضمی نظام میں کئی اقسام کے مسائل بھی پیدا کرسکتے ہیں۔
کولڈ ڈرنکس

خالے معدے پر کولڈ ڈرنک کا استعمال پیٹ تک پہنچنے والے خون کی رفتار کو ہلکا کردیتا ہے، جس کے باعث کھانے کو ہظم ہونے میں وقت لگتا ہے اور دیگر مسائل اس کا خطرہ بڑھ سکتا ہے۔
ترش پھل
ترش پھلوں میں ایک ایسا ایسڈ موجود ہے جو خالی پیٹ پر کھایا جائے تو سینے کی جلن کا باعث بنتا ہے، ان سے گیسٹرک السر کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔
نہار منہ کھائیں
دلیہ
دلیہ معدے کی ہائیڈروکلورک ایسڈ سے حفاظت کا کام کرتا ہے، دلیہ میں فائبر بھی موجود ہوتا ہے جو کولیسٹرول کی سطح کو کم کرنے میں کارآمد ہے۔
جئی کا دلیہ
جئی کا دلیا جسم سے ٹاکسن کی مقدار کو کم کرتا ہے، اسے نہار منہ کھانے سے بہت دیر تک آسودگی کا احساس رہتا ہے۔
گندم سیاه
گندم سیاہ معدے کے لیے نہایت بہترین غذا ہے، اس میں پروٹین، آئیرن اور ویٹامنز کی کثیر تعداد موجود ہے۔
تخم گندم
تخم گندم جسم میں وٹامن ای اور فولک ایسڈ کو پیدا کرتا ہے، اس کے علاوہ اس کے استعمال سے نظام
ہاضمہ بہتر انداز میں کام کرتا ہے۔

انڈے
کئی ڈاکٹروں کے مطابق روزانہ صبح ناشتے میں انڈا کھانے سے کیلوری میں خود با خود کمی آتی جاتی ہے۔
تربوز
تربوز میں لائکوپین کی زیادہ مقدار موجود ہے جو آنکھوں اور دل کے لیے موثر ہے.
بلیو بیریز
حالیہ تحقیق کے مطابق بلیو بیریز روزانہ کھانے سے یاداشت، بلڈ پریشر اور میٹا بولزم کے نظام میں بہتری آسکتی ہے۔
خمیر کے بغیر اناج کی روٹی
اناج کی روٹی کو کھانے کا بہترین وقت نہار منہ ہے، اس میں کاربوہائیڈریٹ اور دیگر غذائیت موجود ہے۔
میوے
ناشتے میں میوے کھانا نظام حاظمہ کو بہتر بنانے کا کام کرتا ہے۔
شہد
شہد جسم کو چست رکھنے میں مدد دیتی ہے، اس کے کئی فوائد ہیں جن میں دماغ کو تیز کرنا اور جسم میں اینرجی پیدا کرنا ہے۔
بشکریہ برائٹ سائڈ

Facebook Comments