سوفٹ ویئر انجینئر نے پیسوں کا مطالبہ کرنے والے شہری کو قتل کردیا ، پولیس کی فائرنگ سے ملزم بھی مارا گیا

کراچی(آن لائن )عزیز آباد میں سوفٹ ویئر انجینئر نے پیسے لینے کیلئے گھر آئے شہری کو قتل کر دیا ۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق عزیز آبادمیں ثاقب نامی سوفٹ ویئر انجینئرکی پیسوں کا مطالبہ کرنے پر وسیم سے لڑائی ہو گئی جس کے بعد اس نے فائرنگ کر کے وسیم کو قتل کر دیا ، پولیس اطلاع ملتے ہی موقع پر پہنچی تو ملزم نے پولیس پر بھی فائرنگ کر دی تاہم جوابی فائرنگ سے ثاقب بھی مارا گیا ۔اس دوران ایک جوان بھی زخمی ہوا جسے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔
ذرائع کے مطابق پیسوں کا مطالبہ کرنے والے نوجوان وسیم نے تلخ کلامی پر چھری سے حملہ کرنا چاہا جس پر سوفٹ ویئر انجینئر ثاقب نے پستول نکال کر اس پر فائرنگ کر دی اور واقعے کی اطلاع ملنے کے بعد جب پولیس ملزم کے گھر پہنچی تو اس نے مبینہ طور پر اپنے اہل خانہ کو یرغمال بنایا اور پولیس پارٹی پر فائرنگ کر دی ۔
ایس ایس پی سینٹرل کا کہنا ہے کہ ملزم ثاقب جوابی فائرنگ کے نتیجے میں مارا گیا مگر جس طرح اس نے پولیس کیساتھ مقابلہ کیا اس سے لگتا ہے کہ وہ تربیت یافتہ تھا ۔ثاقب نے گھر آنے والے وسیم کو قتل کیا اور اپنے ہی گھر والوں کو یرغمال بنایا۔
پولیس حکام کے مطابق ملزم کی ذہنی حالت صحیح نہیں ہے اور وہ پہلے بھی ایک شخص کو قتل کرچکا ہے، زخمی پولیس اہلکار کو عباسی شہید ہسپتال منتقل کردیاگیا۔ملزم نے وسیم کو چار گولیاں ماریں جس کی لاش پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کر دی گئی ہے۔

Facebook Comments