صدر مملکت کیلئے ویاگرا کی سینکڑوں گولیاں کیوں خریدی گئیں؟ ایک انکشاف جس نے کھلبلی مچادی

سیئول (مانیٹرنگ ڈیسک) جنوبی کوریا کی صدر پارک گیون ہائے کے خلاف ملک میں مظاہرے جاری ہیں اور کرپشن کے الزامات پر شہری ان سے استعفے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ ایسے میں ان کے متعلق ایک اور ایسا ہوشربا انکشاف ہوا ہے جس نے مزید کھلبلی مچا دی ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق رواں سال پارک گیون ہائے کے لیے 364جنسی قوت کی گولیاں”ویاگرا“ خریدی گئیں۔ یہ گولیاں اس وقت خریدی گئی جب پارک گیون ہائے اور ان کا عملہ افریقہ کے دورے کی تیاری کر رہا تھا۔ یہ گولیاں وہ اپنے ساتھ افریقہ لے کر گئی تھیں۔ صدر ہاﺅس نے گولیوں کی خریداری کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ ”یہ گولیاں کسی شخص کو جنسی قوت فراہم کرنے کے لیے نہیں خریدی گئیں بلکہ ہوائی سفر کے دوران بلندی کی وجہ سے صدارتی وفد کے عملے کے اراکین کی طبیعت خراب ہونے کی صورت میں انہیں کھلانے کی لیے خریدی گئی تھیں۔“

صدرہاﺅس کے ترجمان نے جنگ یاﺅن کک کا کہنا تھا کہ ”یہ گولیاں خریدی گئی اور وفد کے ساتھ بھیجی گئیں تاہم اس دورے کے دوران کسی کی طبیعت خراب نہیں ہوئی اور یہ گولیاں ویسے ہی واپس آ گئیں۔ یہ گولیاں صدر ہاﺅس کے میڈیکل سٹاف کی ہدایت پر خرید کروفد کے ہمراہ بھیجی گئیں۔“رپورٹ کے مطابق صدر ہاﺅس کے لیے ویاگرا خریدنے کی خبر سامنے آتے ہی جنوبی کوریا میں لوگوں نے بڑی تعداد میں انٹرنیٹ پر اس گولی کے متعلق سرچ کرنا شروع کر دیا اور چند گھنٹوں میں ویاگرا انٹرنیٹ پر سب سے زیادہ سرچ کیا جانے والا لفظ بن گیا۔

Facebook Comments