منٹھار رورل ہیلتھ سنٹر میں ڈاکٹرز کی غنڈہ گردی عروج پر

منٹھار (رحیم یار خان نیوز)منٹھار رورل ہیلتھ سنٹر میں ڈاکٹرز کی غنڈہ گردی عروج پر،سرکاری ادویات باہر میڈیکل سٹوروں پر فروخت،سرکار کو لاکھوں کا ٹیکہ لگایا جانے لگا،ٹیسٹ فیس دس کی بجائے پانچ سو روپے وصول کی جانے لگی،اسرار کرنے پر مریضوں کو دھکے دیکر باہر نکال دیا جاتا ہے،عدنان ایم اے انگلش کا سٹوڈنٹ خون ٹیسٹ کروانے منٹھار رورل ہیلتھ سنٹر گیاتو رمضان لیبارٹری والے نے خون ٹیسٹ کے پانچ سو روپے وصول کئے،پوچھنے پر دھکے مار کر باہر نکال دیا،اور گالی گلوچ بھی کی،جب شکایت لے کر انچارج محمود الزماں کے پاس گیاتو اس نے کہا اگر آپ یہ ٹیسٹ باہر سے کرواتے تو آپ کے پچیس سو روپے لگ جاتے اس نے تو پھر آپ سے پانچ سو روپے وصول کئے ہیں ،واضح رہے کہ ڈاکٹر محمود الزماں نے پچھلے دنوں ایک لڑکی سے بھی چھیڑ چھاڑ کی تھی جو کہ کافی دن میڈیا کی زینت بنے رہے،رمضان لیبارٹری والا سسپنڈ ہونے کے باوجود بھی ڈاکٹر کی آشیر باد سے ڈیوٹی سر انجام دے رہا ہے،اوپر کا یہ سارا پیسہ عملے کے سبھی لوگ مل کر کھاتے ہیں،عدنان نے ڈاکٹرز کے رویہ کی وجہ سے دلبرداشتہ ہو کر پرائیویٹ ہسپتال سے ٹریٹ منٹ کروائی

Facebook Comments