پانامالیکس کے ضوابط کار پر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ڈیڈ لاک تشویشناک ہے امیر جماعت اسلامی ضلع بہاول پور ڈاکٹر محمد اشرف

بہاول پور(ویب نیوز) امیر جماعت اسلامی ضلع بہاول پور ڈاکٹر محمد اشرف ،امیر شہر سید ذیشان اختر نے کہاہے کہ پانامالیکس کے ضوابط کار پر حکومت اور اپوزیشن کے درمیان ڈیڈ لاک تشویشناک ہے۔وزیر اعظم نوازشریف اور ان کے خاندان کانام پانامالیکس میں آچکا ہے لہٰذاشریف فیملی اور جن پاکستانیوں کے نام پانامالیکس میں منظر عام پر آئے ہیں ان سب کو بھی تحقیقات میں شامل کیاجائے تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوسکے۔ٹی او آرز کے معاملے میں حکومت کی جانب سے غیر سنجیدگی ناقابل فہم اور اس سارے عمل سے راہ فرار کے مترادف ہے۔پاکستانی عوام پانامالیکس میں بے نقاب اور قرضے معاف کرانے والوں کا کڑااحتساب چاہتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ کرپشن ملک کی جڑوں کو کھوکھلاکررہی ہے۔ایک دوسرے پر تنقید کی بجائے خود احتسابی کی ضرورت ہے۔پڑھے لکھے نوجوان سڑکوں پر نوکریوں کے لئے دردرکی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہیں جبکہ نااہل،کرپٹ اور چوڑ لٹیرے اسمبلیوں میں بیٹھے ہیں۔مٹھی بھر اشرافیہ کاطبقہ سیاہ وسفید کامالک بن چکا ہے۔ضرورت اس امر کی ہے کہ فرسودہ اور کرپٹ نظام کے خاتمے کے لئے محب وطن اور باکردار افراد کے ہاتھوں میں ملک کی باگ ڈور دی جائے۔انہوں نے مزیدکہاکہ ملک ایٹمی قوت تو بن گیا مگر ہم قانون ساز ایوانوں کوجاگیرداروں،وڈیروں اور سرمایہ داروں سے پاک نہیں کرسکے۔جب تک ملک میں احتساب کا عمل بلاخوف وخطر اور بلاتفریق نہیں ہوتا تب تک نہ ملک ترقی کرسکتا ہے اور نہ ہی عوام کی زندگی میں خوشحالی آسکتی ہے۔کرپشن کرنے والے،قرضے معاف کروانے والے اور ٹیکس چوروں کو سخت سزائیں دی جائیں۔انہوں نے کہاکہ دنیا کی پہلی اسلامی ایٹمی ریاست پاکستان خدا کی نعمت ہے۔ہمیں اس کی ترقی کے لئے داخلی انتشار اور خلفشار کوختم کرکے اتحادویکجہتی کے ساتھ آگے بڑھنا ہوگا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ ٹی اوآرز کے معاملے پر فراخ دلی کامظاہرہ کرتے ہوئے ڈیڈ لاک کو ختم کیاجائے تاکہ کمیشن کے لئے راہ ہموار ہوسکے۔

Facebook Comments