تھانہ احمد پور لمہ حدود میں لڑائی جھگڑے‘ دنگے فساد معمول بن گئے‘ پولیس تماشائی بن کر رہ گئی

جمالدینوالی(ویب نیوز)تھانہ احمد پور لمہ حدود میں لڑائی جھگڑے‘ دنگے فساد معمول بن گئے‘ پولیس تماشائی بن کر رہ گئی تفصیل کے مطابق گذشتہ روز چوک شہبازپور کے قریب دو برادریوں دھاندو اور بلوچوں کے درمیان ہونیوالی لڑائی کی ابتداء میں ہی پولیس کو فون کیا گیا مگر کسی نے کوئی توجہ نہ دی لڑائی جھگڑا تقریبا6گھنٹے تک جاری رہا جس میں درجنوں افراد زخمی ہوگئے اور کئی افراد کی حالت ابھی تک تشویشناک بھی ہے پولیس کو اطلاع بار بار دی گئی مگر پولیس پھر بھی 6گھنٹے کے بعد پہنچی علاقہ کے مکینوں کا کہنا ہے کہ اگر پولیس بروقت کارروائی کرتے تو بڑے جھگڑے کی نوبت ہی نہ آتی پولیس کی بے حسی اور روایتی غفلت کی وجہ سے جھگڑا خونی لڑائی میں تبدیل ہوگیا جس کی تمام تر ذمہ داری پولیس پر بھی عائد ہوتی ہے انہوں نے ڈی پی او رحیم یار خان سے مطالبہ کیا ہے کہ واقعہ میں ملوث افراد کے ساتھ ساتھ پولیس کی غفلت پر بھی ان کے خلاف کارروائی کی جائے تاکہ آئندہ ایسی غفلت اور لاپرواہی نہ ہوسکے ۔

Facebook Comments