پی پی اور تحریک انصاف پانامہ لیکس کی تحقیقات میں قطعی سنجیدہ نہیں

صادق آباد( رحیم یار خان نیوز)پاکستان مسلم لیگ(ن) کے ایم پی اے سردار رئیس محبوب احمد خاں نے کہا ہے کہ پی پی اور تحریک انصاف پانامہ لیکس کی تحقیقات میں قطعی سنجیدہ نہیں ۔ ٹی اورآرزکی تیاری میں اپوزیشن جماعتوں کے نمائندوں کا رویہ متعصبانہ اور غیرسنجیدہ ہے۔اپوزیشن کے نمائندے پارلیمانی کمیٹی کے اجلاسوں کو نتیجہ خیزبنانے کی بجائے ڈرامے بازی کرکے قوم کا وقت بربادکررہے ہیں۔اگر اپوزیشن رہنماؤں نے قومی ذمہ داری محسوس کی ہوتی اور اجلاسوں میں سنجیدہ رویہ اختیار کیا ہوتا تو اب تک ٹی اوآرزکی تیاری کا کام مکمل ہوچکا ہوتا۔چونکہ متحدہ اپوزیشن احتساب کا دائرہ کار صرف اور صرف وزیراعظم اوران کے خاندان تک محدودرکھنا چاہتی ہے جس کے سبب مسائل جنم لے رہے ہیں اور اب تک کسی ایک نقطے تک پہنچنا محال ہوگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف باربار ٹی اوآرز کی تشکیل میں تعطل کا سبب بن رہی ہے ،اس کے رہنما نہیں چاہتے کہ مسائل پارلیمنٹ میں حل ہوں بلکہ وہ چاہتے ہیں کہ عوام سڑکوں پر نکل آئیں اورشہروں اور بازاروں میں ماراماری ہو اور جمہوری نظام ایک بار پھر ماضی کا حصہ بن جائے لیکن باشعورعوام اپوزیشن کی ترغیبات میں آنے کے لئے تیار نہیں ہے۔اس لئے سیاسی جماعتیں حب الوطنی کا مظاہرہ کرتے ہوئے تعطل ختم کریں اور جلد ہی معاملے کو انجام تک پہنچائیں۔انہوں نے کہا کہ اگر پارلیمانی کمیٹی اپناکام مکمل کرنے میں ناکام ہوئی تویہ ملک اور قوم کی بدقسمتی ہوگی اور اس ناکامی کے ذمہ دار اپوزیشن رہنما خاص طور پرتحریک انصاف کی قیادت ہوگی۔پیپلزپارٹی اور تحریک انصاف کے حالیہ سیاسی رویوں سے لگتا ہے کہ یہ جماعتیں حقیقی اپوزیشن جماعتیں نہیں رہیں بلکہ سیاسی مافیا کی شکل اختیارکرگئی ہیں جن کا مقصد جمہوریت کی بساط لپیٹنا اور عوام کو دوبار غلام بنانا ہے۔ انہوں نے اپوزیشن رہنماؤں کو مشورہ دیا کہ وہ پارلیمانی نظام کی کامیابی اور جمہوریت کے استحکام کے لئے جارحانہ طرزسیاست ترک کرکے مذاکرات کی میزپرآئیں کیونکہ مسائل بالآخرباہم گفت وشنید سے ہی حل ہوں گے ، احتجاجی سیاست لاحاصل ہوگی۔

Facebook Comments